اگر حاملہ خاتون بمار ہو جائے

اگر حاملہ خاتون بمار ہو جائے

اگر حاملہ عورت بيمار ہو جائے اور ا سے دوا كى ضرورت پڑ جائے تو دوا كے استعمال ميں ميں بہت زيادہ احتياط كى ضرورت ہے كيوں كہ يہ دوازيادہ تر بڑى عمر والوں كے ليے تيار كى جاتى ہے اور جب عورت اس سے استفادہ كرتى ہے تو شكنيہں كہ وہ اس كے پيٹ ميں جا كر بچے كے بدن ك جا پہنچتى ہے اور اس پر بھى اثر انداز ہوتى ہے كچھ كہا نہين جا سكتا كہ بچے پروہ كيا اثر ڈا لے _ بحر حال كوئي بھى دوا پيٹ ميں موجود بچے كے لئے بے اثر نہيں ہوتى لہذا حاملہ خاتون كو نہيں چا ہيے كہ بغير سو چے سمجھے نتيجے كو ملحوظ ركھے بغير دوا استعمال كرے اولا تو جب تك ضرورت تقاضانہ كرے دواستعمال نہ كرے _ ثانيا اگر ناچار ہو جا ئے تو لازمى طور پر ڈاكٹر كو بتا ئے كہ ميں حاملہ ہوں كيا يہ دوا ميرے بچے كے ليے تو ضرر رساں نہيں لہذا كسى لائق ڈاكٹر كے مشور ے سے ضرورى مقدار ميں دواكھا ئے_

البتہ اگر بيمارى كوئي اہم ہو تو چاہيے كہ اپنى سلامتى اور بچے كى حفاظت كے لئے ڈاكٹر كى طرف رجوع كرے كيونكہ وہ بيمارى نہ صرف ماں كے ليے نقصان وہ ہو سكتى ہے بلكہ ممكن ہے بچے كى سلامتى كو بھى خطر ے ميں ڈال دے _

ايك ماہر لكھتے ہيں :

ممكن ہے كہ بعض وائرس ( Virus ) اور مائيكروب ( MICROBE ) مياں بيوى سے گرز كررحم ماورميں موجود اپنا دفاع نہ كرسكنے والے بچے پر حملہ آور ہو جائيں اور اسے بھى اسى بيمارى ہيں مبتلا كرديں ( 1)
 

ايك اور مقام پر لكھتے ہيں ;

ماں كى غذائي كيفيت ميں تبديلى اور جودو اوہ استعمال كرتى ہے نيز جن بيماريوں سے وہ دو چار ہوتى ہے يہ سب جنين پر اثر انداز ہوتى ہيں ..... ابتدائي دنوں ميں رحم مادر ميں بچے ميں پيدا ہونے والى چھوٹى سى خرابى بڑے ہو تے ہوئے بہت زيادہ اثرات مرتب كرتى ہے اسى بنياد پردوران حمل اپنى صحت كى حفاظت كے سلسلے ميں خواتين پر خاص ذمہ دارى عائد ہوتى ہے يہاں تك كہ ان كے حمل ٹھہر نے كى صلاحيت كے ضائع ہونے كا احتمال ہے (2)

وہ يہ بھى لكھتے ہيں :

بہت سے غير غذائي مواد بھى ايسے ہيں كہ جواماں باپ سے گزر كر بچے پر اس طرح سے اثر انداز ہو سكتے ہيں كہ اس كى نشو و نما پر منفى اثر ڈاليں _ زيادہ تر دوائياں جو عموما استعمال كى جاتى ہيں وہ بالغ افراد كى تندرستى كے ليے بنى ہو تى ہيں يعنى ان كا تجربہ پورے (كامل) انسان پر كيا جا تا ہے _ ڈائرس ، بيكٹير يا اور تمام جراثيم كہ جو ماں كے بدن ميں ہوتے ہيں بعض اوقات بچے كو بھى اس بيمارى ميں مبتلا كرديتے ہيں يا بعض اوقات بچے كى نشو و نما كو خراب كرديتے ہين اور بچہ غير معمولى طور پر بڑاہونے لگتا ہے (3)

1_ بيو گرافى پيش از تولد ص 150
2_ بيو گرافى پيش از تولد ص 48
3_ بيو گرافى پيش از تولد ص 183